قومی اسمبلی قائمہ کمیٹی نے ڈاکٹر عامر لیاقت کو طلب کرلیا

اسلام آباد/قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قواعد وضوابط نے جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان پر بے بنیاد الزامات لگانے کا نوٹس لیتے ہوئے ٹی وی اینکر عامر لیاقت اور بول ٹی وی مالکان کو آئندہ اجلاس میں طلب کرلیا،کمیٹی ارکان کا کہنا تھا کہ میڈیا پر بیٹھ کر پارلیمنٹرین کو ٹارگٹ کرنا سب سے آسان طریقہ بن گیا ہے،کچھ میڈیا چینل ملک میں مایوسی پھیلا رہے ہیں،چوکوں پر بیٹھ کر لوگوں کی عزتیں نہیں اچھالنے دیں گے، عامر لیاقت کو کمیٹی میں طلب کیا جائے اگر وہ الزامات کے ثبوت پیش کرتے ہیں تو ٹھیک ورنہ ان کو بلیک لسٹ کردیا جائے،چیئرمین پیمرا ابصار عالم نے کہاکہ کچھ چینل مالکان اپنے بلیک کے کاروبا ر کو بچانے کیلئے یہ سب کچھ کرتے ہیں،آزادی صحافت آئینی حق ہے مگر اس کا جہاں غلط استعمال ہو اس کو روکنا چاہیے ،بغیر ثبوت الزام تراشی کو روکنے کیلئے پیمرا آئین میں ترامیم تجویز کر کے وزارت اطلاعات کو بھجوائی گئی ہیں جن میں جرمانے کا حجم بڑھائے گے ہیں ،جس پر کمیٹی نے آئندہ اجلاس میں پیمرا سے آئین میں تجویز کردہ ترمیم پر بریفنگ طلب کر لی۔ کمیٹی نے رکن قومی اسمبلی اظہر قیوم ناہرہ کا فون نہ سننے اور ان کی کالز کا جواب نہ دینے پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈنوشہرہ ورکاںبابرہ واہلہ کے خلاف سخت ایکشن لینے کی سفارش بھی کرتے ہوئے آئندہ اجلاس میں چیف سیکرٹری پنجاب اور پروجیکٹ ڈائریکٹر لینڈ پنجاب کو طلب کرلیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں