نیشنل ایکشن پلان کی بھٹی سے مدارس نکل آئے، ایک دہشت گرد نہیں ملا۔قاری حنیف جالندھری

کراچی / وفاق المدارس کے سیکرٹری جنرل قاری محمد حنیف جالندھری اور مجلس عاملہ کے رکن و جامعہ بنوریہ عالمیہ کے مہتمم مفتی محمد نعیم نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ مداراس کے ساته ناروا سلوک کیا جار ها هے
اربوں روپے کی کرپش کرنے والے آزاد گهوم رهے هیں،پنجاب میں مذهبی لوگوں کو جعلی مقابلے میں مارا جارا ها هے، مفتی محمد نعیم کا کہنا تھا کہ میں شہباز شریف کو خادم اعلی نہیں سمجھتا، یہ مغلیہ طرز کی حکمرانی کررہے ہیں، خواتین بل پر ان کا کہنا تھا کہ یہ حقوق نسواں بل نہیںبلکہ رسوا بل ہے،اس بل میں ترمیم کی گنجائش هی نہیںاس بل کو فورا واپس لیا جائے ، ان کا کہنا تھا ملک کو سیکولر بنانے نہیں دیا جائے گا،اسلام کے خلاف مسلسل سازشیں کی جارہی ہیں، مزید کہنا تھا کہ انتہا پسندی اور تشدد کے هر واقع کو اسلام اور مدارس سے جوڑنے کی کوشش کی جارہی هے اس موقع پر قاری حنیف جالندھری کا کہنا تھا کہ نیشنل ایکشن پلان کی بھٹی سے مدارس نکل آئےکوئی ایک الزام ثابت نہیں ہوسکا یہاں تک کہ کوئی ایک دہشت گرد یا ٹارگٹ کلر تک نہیں ملا، مزید قاری حنیف جالندھری کا کہنا تھا کہ وفاق المدارس 3 اپریل کو عظیم الشان استحکام پاکستان و مدارس کانفرنس کرنے جارہی ہے، جس کا انعقاد لاہور میں ہورہا ہے، ان کا کہنا تھا ملک بھر سے جید علماء کرام اور مدارس دینیہ کے طلباء اس میں شرکت کریں گے۔

IMG_3535

اپنا تبصرہ بھیجیں